Google+ Followers

Friday, 30 May 2014

جدیدیت کو تقلیدی رویے نے زیادہ نقصان پہنچایا: شمیم حنفی


شمیم حنفی جدید اردو تنقید کا ایک اہم ستون ہیں۔ان کے علمی کام’نئی شعری روایت‘ اور ’جدیدیت کی فلسفیانہ اساس‘ نے جدیدیت کے فلسفے کی صحیح عکاسی میں اہم کردار ادا کیا۔ریختہ کے لیے زمرد مغل سے کئی گئی ان کی اس بات چیت میں بہت سے اہم گوشوں پر روشنی ڈالی گئی ہے۔مثال کے طور پر شمیم صاحب کہتے ہیں کہ جدیدیت کو مغربی ادب کی تقلید کے رویے نے نقصان پہنچایا اور بہت سے لوگوں نے مشرق اور مغرب کی جدیدیت کو ایک ہی قسم کا رجحان سمجھنے کی غلطی بھی کی۔اس کے علاوہ بھی اس گفتگو میں شمیم حنفی صاحب کی زندگی، ان کے مطالعے، فکریات اور تخلیقی کاوشوں پر بھی بہت سی اہم باتیں سننے کو ملتی ہیں۔امید ہے کہ ریختہ کے ذریعے پیش کی جانے والی اس گفتگو کو شائقین علم و ادب پسند فرمائیں گے۔

انٹرویو سننے کے لیے کلک کریں:

No comments:

Post a Comment